منظر اور پس منظر

                                                         

تحریر نمرۃ العین راجہ اسلام آباد                                                    

میں  سٹوڈنٹ ایم ایس سی ماس کمیونیکیشن نیشنل یو نیورستی ما ڈرن لینگو یجزنمل اسلآم آباد آج کل میڈیا پر مولانا طارق جمیل کی لائیو ٹیلی تھون میں کی جانے والی گفتگو کا بڑا چرچا ہے جس میں انہوں نے کہا کے بائس کروڑ عوام میں کتنے لوگ ایسے ہیں جو کےسچے ہیں اس بات کو حسب روایت میڈیا خوب اچھال رہا ہے ان کے اس بیان کو میڈیا درحقیقت غلط رنگ دے رہے ہے  اصل میں تواثہوں نے تو ہم سے یہ سوال کیے ہےکے کتنے لوگ ہیں جو کےسچائی کا ساتھ دیتے ہیں اب اس بات کو میڈیا اپنی چرب زبانی کے ذریعے بڑھا چڑھا کے پیش کر رہا ہے وہ اس بیان کو یوں پیش کرر ہا ہے جیسے انہوں نے بائس کروڑ عوام کو جھوٹ کہہ دیا ہو میرا خیال میں تو میڈیا کو اس وباء کے مشکل دور میں عوام کو درپیش حقیق مسائل کو اجاگر کرنا چایئے اور ان کا تدارک بھی کرنا چا یئے جیسے کہ گراں فروشی۔ میڈیا کو ان گراں فروشوں کے خلاف ایکشن لینا چاہیئے اور انہیں ریٹ لسٹ آویزں کرنے پر مجبور کرنا چاہیئے۔ منظر میں رہ کر پس منظر پر توجہ دینی چاہیئے 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

8 + 5 =