بامقصود شاعری


ڈاکٹر علی بیات
شعبه اردو، یونیورسٹی آف تہران، ایران
جناب ڈاکٹر مقصود جعفری کی اُردو شاعر ی کا مطالعہ کریں تو یہ بات واضح ہو کر سامنے آ جاتی ہے کہ وہ بہ یک وقت غزل کی کلاسیکی اور جدید روایت کے شاعر ہیں۔ ان کی غزلوں کا مزاج کہیں کلاسیکل غزل کے لب و لہجے کی نشاند ہی کرتا ہے او ر کہیں جدید ڈکشن کی غزل کا ۔جعفری صاحب کے ہاں غزل ایک نئے رویے کے ساتھ سامنے آتی ہے،مگر ان میں مشترک بات یہ ہوتی ہے کہ روایت کا گہرا رچاؤ ان میں شامل ہوتا ہے۔ڈاکٹرمقصود جعفری صاحب نے زندگی اور اس سے پیدا شدہ کیفیات کو بہت قریب سے دیکھا ہے۔ اپنے اردگرد کے ماحول کا گہری نظر سے مطالعہ و مشاہدہ کیا ہے یہی وجہ ہے کہ ان کی غزل کے مضامین اور موضوعات محدود نہیں بلکہ ان میں بے پناہ وسعت ہے۔ان کی غزلوں میں تغزل کی چاشنی بھی ہے اور تاثر کی شیرینی و مٹھاس بھی، نئے مضامین کی گھلاوٹ بھی ہے اور پرانے مضامین کی رچاوٹ بھی۔
ڈاکٹرمقصود جعفری کی شعری دنیا ان کے اپنے انداز اور طرزِ فکر سے عبارت ہے۔ ان کی آواز اور لب و لہجہ اس انفرادیت کا غماز ہے جو انھی سے مخصوص ہے۔ ان کے یہاں ندرت ہے اور ایک ایسا انوکھا پن ہے جو انھیں معاصرین غزل گو شعرا میں ایک الگ مقام پر فائز کرتا ہے۔ ان کی دلچسپی فطرت، عشق و محبت، جمالیات اور تمدنی مسائل سے ہے اسی لیے ان کے یہاں مختلف ادبی رجحانات کا ایک متوازن امتزاج نظر آتا ہے۔ ان کی شاعری میں ایک رجحان ترقی پسندی کا ہے لیکن یہ ترقی پسندی کبھی نعرہ بازی کی سطح نہیں چھوتی اور نہ ہی ان کے انقلابی ہونے کا احساس دلاتی ہے بلکہ ان کی غزل میںموجود جمالیاتی رچاؤ ان کے ترقی پسندانہ خیالات پر حاوی نظر آتا ہے جو ان کی منفرد پہچان ہے۔
ڈاکٹرمقصود جعفری کے موضوعات متنوع ہیں۔ ان کی نظر میں وسعت ہے وہ انسانی زندگی کی پیچیدگیوں کا شعور رکھتے ہیں۔ جذباتی معاملات معاشی اور تہذیبی حالات کی الجھنوں کو بھی پوری طرح سمجھتے ہیں یہی وجہ ہے کہ جو احساس اور جذبہ ان کی شاعری میں نظر آتا ہے وہ جدید دور کے انسان کا احساس اور جذبہ ہے۔ اس کا اظہار وہ روایت کی پاسداری کے ساتھ کرتے ہیں۔ چنانچہ ان کے ہاں روایت اور تجربے کا حسین امتزاج سب سے زیادہ نمایاں نظرا ٓتا ہے۔

اپنی انھی معروضات کے ساتھ قارئین کی خدمت میں ان کے چند اشعار پیش خدمت ہیں:
اے مرے دوست ذرا حفظ ِمراتب رکھنا

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

7 + 5 =