سفر نامہ

منی دیوسائی

#شوق_آوارگی (قسط نمبر6) دو رات بعدجوبسترمیسرآیاتوپھر گھوڑےبیچ لمبی تان کرجی بھرسوئے. ویسےبھی خوابوں کی وادی کچھ زیادہ ہی حسین لگ رہی تھی. آج چین ہی چین کاارادہ تھا مگروہ پنجابی میں کہتےہیں ناکہ چورنالوں پنڈ کالی کامصداق بنےہمارےمیزبان سامان سفرباندھ چکےتھے. اورگھورگھورہمیں دیکھ رہےتھےکہ یہ صاحب بھی شوق آوارگی کوبدنام کرنےکےدم پرہیں. خیرچندمنٹوں میں تیاری پکڑی اورسکردو پہلےمرکز سیرکی طرف ... Read More »

استقبال

شوق_آوارگی (قسط نمبر5) سکردوپہنچنےپرسب سےپہلےتوچھم چھم کرتےہوئےبارش نےہمارااستقبال کیا. یہاں کی بارش میں بھی لاہور کی بارش کی طرح سرورساتھا. بہت زیادہ ٹھنڈک ہونے کےباوجود ذرابھی دل نہیں چاہ رہاتھاکہ بارش کی ایک بوندکوبھی اپنےآپ سےیک جان ہونےسےروکوں. گمبہ سکردومیں ہماری قیام گاہ بلکل سٹاپ کےساتھ ہی تھی. میزبان فرمانےلگےکارمیں گھرتک چلتےبارش بھی ہےاور سردی بھی ورنہ راستہ توحقیقت میں ... Read More »

شیخوپورہ کا نام کیسے پڑا ہے

عبدالوارث ساجد کسی بھی شخص۔ جگہ یا چیز کا نام ہی اس کی پہچان ہوتا ہے یہی وجہ ہے کہ آپ کو کوئی بھی چیز جگہ یا شخص ایسا نہ ملے گا جس کا نام نہ ہو کیونکہ نام ہی سے مقام ملتا ہے اور نام ہی سے پہچان ہوتی ہے۔ یہ الگ بات ہے کہ نام رکھنے اور نام ... Read More »

گنجےپہاڑ

شوق_آوارگی (قسط نمبر4) جب تھوڑامزیدآگےچلےتومجھے احساس ہواکہ واقعی ابھی توپارٹی شروع ہوئی ہے۔ جوسرسبزوشاداب پہاڑی سلسلہ حویلیاں ایبٹ آبادسےشروع ہواتھاوہ ختم ہوچکاتھالیکن اب اسکی جگہ بلندترین اور انتہائی خشک زار پہاڑوں نے لےلی تھی۔ پوچھنےپرپتاچلاکہ اب ہم چلاس کے گردونواح میں ہیں۔ چلاس سوات اوربشام کی طرح سرسبزوشاداب پہاڑی علاقہ نہیں بلکہ اسکےبرعکس خشک اور بلکل گنجامنجاپہاڑی سلسلہ ہے۔ صبح ... Read More »

الوداع بشامبشام

#شوق_آوارگی (قسط نمبر3) ایک ہوٹل کےاحاطہ میں گاڑی رکی ہوئی تھی.اونچےلمبےپہاڑوں کےدامن میں ہوٹل کی عمارت جنت میں بنےکسی محل کاخاکہ لگ رہی تھی.ہوٹل کےسامنےدریاکسی حسین دوشیزہ کی طرح اٹھکتی مٹکتی چال میں لمبی چٹیاکےبیچ کمرمیں لہلہانے کی طرح بل کھاکھاکرگزررہا تھا.دریاکےپانی کی سورش دلربا محبوبہ کی طرح مدھم مدھم سروں میں گنگناکر رات کوسمیٹ رہی تھی.چاندکسی پردہ نشیں ماہ ... Read More »

شوق_آوارگی

قسط نمبر2 محبتاں سچیاں بہت دفعہ سننےمیں آتاتھاکہ فلاں شخص پرگوری میم فداہوگئی اور اپناسب کچھ تیاگ کراس کےساتھ پاکستان چلی آئی. لیکن مجھےیہ تمام باتیں فلمی لگتی تھیں کہ بھلا آج کےدورمیں بھی کوئی اتنے اخلاص سےمحبت کرسکتاہے. خیرمجھےاپنانظریہ بدلناپڑا. سکردوجانےسےپہلےہم سیالکوٹ پہنچےجہاں پرہماری آبائی زمین یعنی زرعی فارم ہے. ہم وہاں پہنچےتو وہاں ایک گوری میم کودیکھ کرسخت ... Read More »

شوق_آوارگی

(قسط نمبر1) دوسال قبل شوق آوارگی کا دامن تھامےمیں گھرسےنکل پڑا.. ہدف یہ طےہواکہ دھرتی ماں کوچوم کےقریہ قریہ گھوم کے تسکین کی جائے.. یوں میں گھومتاگھماتاسکردو بلتستان تک جاپہنچا.. بہت کچھ دیکھنےدکھانےکوملااوربہت کچھ دل دہلانے کوملا.. سوچاتھاکہ چلودوستوں سےیہ سفرسفرنامہ کےطور پرشیئرکروں گالیکن مسلسل مصروفیات نےاتنی فرصت ہی نا دی کہ کچھ لکھ پاتا. یوں یہ سفرنامہ تأخرکاشکار رہااب ... Read More »