100/50 لفظی کہانی

” رشک “

عدالت کے احاطے سے آتے ہوئے اسے دیکھا ۔۔۔ گاڑی میں سوار ۔۔۔ ہتھکڑی نادارد ۔۔۔ ارد گرد وردی اور سیولین لباس میں موجود اہلکاروں کا جھرمٹ ۔۔۔ گاڑیوں کا پروٹوکول ۔۔۔ عدالت لائے گئے موبائل سنیچر نے کانسٹیبل سے پوچھا : ” کون تھا یہ ؟” ” 400 افراد کا قاتل ! ” موبائل سنیچر نے اسے رشک سے ... Read More »

زنجیرِ عدل

وہ روز جاتا ۔۔۔ زنجیرِ عدل ہلاتا ۔۔۔ اسے انصاف کی تلاش تھی ۔۔۔ کوئی شنوائی کو نہ آتا ۔۔۔ وقت گزرا ۔۔۔ محنت کی ۔۔۔ عمارت میں پہچنے کا حق حاصل کیا ۔۔۔ باہر زنجیر ہلانے والوں کا جم غفیر تھا ۔ اندر پہنچ کر معلوم ہوا زنجیرِ عدل کی آواز اندر نہ آتی تھی ۔۔۔ عمارت ساؤنڈ پروف ... Read More »

( آواز )

آمنہ نثار راجہ… وہ بہت جذباتی ہوتے ہوئے بولی…. لوگ ظلم کے خلاف آواز اٹها رہے ہیں پهر بهی انصاف مہیسر نہیں ایسا کیوں ؟؟ اس سوال نے مجهے عجیب کشمکش میں مبتلا کر دیا … شاید اس لیے کہ ظلم کے خلاف آواز اٹھانے والوں سے زیادہ طاقتور وار ظالم کا ساتھ دینے والے ہیں. Read More »

” ہار “

پچاس لفظوں کی کہانی بشیر اور بلال نے ہار خرید کر ماں کو دیئے اور کہا کہ کل مدرسے میں ہماری دستار بندی ہے ۔ وہاں سے واپسی پر ہمیں یہ ہار پہنائیے گا ۔ جہاز آئے ، مدرسے پر بمباری کی اور چلے گئے ۔۔۔ دروازے پر ماں ہار ہاتھوں میں تھامے ان کا انتظار کرتی رہ گئی ۔۔۔ ... Read More »

” عالمی یومِ خواتین “

آج عالمی یومِ خواتین ہے ۔۔۔ گلاب کا پھول توڑ کر اپنی طرف سے خود کو پیش کیا کہ آج ” ہمارا ” دن ہے ۔۔۔ خوش ہونے کا ہر حق ہے ہمیں ۔۔۔ شام میں ایک ننھی کلی کے مسلے جانے کی خبر نظر سے گزری ۔۔۔ پھول پر نظر پڑی ۔۔۔ پھول مرجھا چکا ہے ۔۔۔ عروج احمد Read More »

 ” بنیاد “

عروج احمد ‘ایک بہترین معاشرہ کیسے تشکیل کیا جائے ؟’ سیمینار میں سوال کیا گیا ۔ ‘بہترین فرد بنا کے ۔’ ‘یہ کیونکر ممکن ہو گا ؟’ پوچھا گیا ۔ ‘ فرد سے افراد بنتے ہیں ۔۔۔ افراد سے معاشرہ ۔۔۔ معاشرے سے قوم ۔۔۔ قوم سے اقوام ۔۔۔ بنیاد درست ہو گی تو عمارت درست ہی تعمیر ہو گی ... Read More »

 سطحیت “

عروج احمد عجب کردار تھا وہ ۔۔۔ شاید تیسری جنس سے ۔۔۔ توجہ کھنچنے کے بے سروپا طریقے ۔۔۔ کچھ اتنے بے ڈھنگے کہ غصہ بھی آئے ۔۔۔ لیکن کمال کی استقامت ۔۔۔ لوگ اس کی حرکتوں سے محظوظ ہوتے ، تاؤ کھاتے ۔۔۔ سب نے سب دیکھا ماسوائے اس کی آنکھوں کے ۔۔۔ اداسی اور دکھ سے بھری آنکھیں ... Read More »

خرچہ

سید شاہد عباس یار میرا کسی بڑے سیاستدان سے رابطہ نہیں ہو رہا۔ ہر جگہ کوشش کر کے دیکھ لی، مگر کوئی فائدہ نہیں۔ کوئی قریب بھی نہیں پھٹکنے دیتا۔ میں نے رونی صورت بنا کے دوسُو سے اپنا دکھڑا کہا۔ وہ میرا بچپن کا دوست تھا،اور گھاگ کھلاڑی بھی۔ میرے کان میں سرگوشی کی، اُس کے مشورے پہ بجھے ... Read More »

وراثت

چہل قدمی پہ جاتے ہوئے ایک مردہ بلونگڑا نظر آیا ۔ واپسی اسی راستے سے ہوئی ۔ بلونگڑے پہ نظر پڑی تو کوؤں کو اسے نوچ کھاتے دیکھا ۔ مرے ہوئے کے ساتھ ایسا سلوک ۔۔۔ دل میں ایک ہوک سی اٹھی ۔۔۔ مرنے کے بعد وراثت کی تقسیم کا معاملہ نظر میں گھوم گیا ۔۔۔ عروج احمد   Read More »

بے غیرت

از طر ف :میمونہ صدف ..الفاظِ بے زبان تم میرے گھر آ کر بات کرو ۔ روتی ہو ئی گذارش کی گئی اس نے آنا تھا نہ آیا۔ تمھیں بڑا مان تھا ۔پہلی آواز۔ اس نے نہ آنا تھا اور نہ آئے گا ۔ دوسری آواز ۔ بے غیرت ، بے آبرو ،بے حیا Read More »