ادبی مزاح

تَلاطُم

کچھ احباب لفظ *تَلاطُم* (شِدّت، طُوفان) کو ایسے “طلاطم” لِکھتے ہیں جیسے اُن کی اپنی ہی قَومی زُبان میں *تَلاطُم* ختم ہو رہا ہے۔ *اِقبَال اَحمَد پَسوال* Read More »

ضِیاع

کچھ احباب لفظ *ضِیاع* (نُقصان) کو ایسے “زیاع” لِکھتے ہیں کہ، اُن کے لِکھے “زیاع” سے اُردو ادب کو واقعی *ضیاع* ہوتا ہے۔ *اِقبَال اَحمَد پَسوال* Read More »

قاعدہ

*مزاحیات اردو زبان کا ایک قاعدہ ہے کہ *جب ‘خ’ کے فوراً بعد* *’و’ آتا ہے تو ‘و’ معدوم ہو* *جاتا ہے* یعنی نہیں پڑھا جاتا جیسے *خواہش، خواندہ، خواہ مخواہ،* *خواب، خویش، خواجہ، وغیرہ* لیکن یہی *”و’ جب ‘خ’ کے بعد* *”خواتین”* میں آئے تو قطعاً *_خاموش نہیں رہ سکتا_* *(وجاہیات)* Read More »

مزیدار

کُچھ دوست لفظ *مزیدار* کو ایسے “مذیدار” لکھتے ہیں کہ اُن کا لِکھا “مذیدار” بالکل بھی *مزیدار* نہیں لگتا۔ *اِقبَال اَحمَد پَسوال* Read More »

قومـــــــی لطیفـــــے

ڈی بریفنگ // شمشاد مانگٹ پاکستان کا پورا نظام ایک لطیفہ ہے۔عوامی مفاد کیلئے بنایا گیا ہر قانون بھونڈا مذاق تو ہے ہی لیکن خوبصورت لطیفہ بھی ہے۔آجکل چونکہ الیکشن کا جادو سر چڑھ کر بول رہا ہے اس لئے ہر امیدوار کی انتخابی مہم میں ہونے والے وعدے اور تسلیاں ہمارے معاشرے کے بہترین لطیفے قرار دئیے جاسکتے ہیں۔ہمارے ... Read More »

*ادبی چوری*

کچھ لوگ ھر وقت “چھاپہ خانہ” (فوٹو سٹیٹ مشین) لیۓ پھرتے ھیں، جیسے ھی، جہاں بھی کوئی بات دیکھی، تو چھاپہ خانہ والوں کی طرح، یہ جانے بغیر کہ یہ کیا لکھا ھے، جَھٹ سے نقل کی، چپساں کی اور تقسیم کر دی، یہ بھی گوارہ نہیں کرنا کہ، جو بھیجا جا رھا کیا وہ درست ھے؟ کوئی لفظی غلطی ... Read More »

” اُسلُوب “

کُچھ دوست لفظ ” اُسلُوب ” کو ایسے اصلوب لِکھتے ھیں، جیسے اُنہیں اُردُو لِکھنے کا ” اُسلُوب ” (ڈھنگ) ھی نہ ھو۔ اِقبَال اَحمَد پَسوال Read More »