افسانہ

” پُرانی کار“

تحریر٠٠٠ملک اسلم ہمشیرا موٹر ساٸیکل پر سردی سے لڑتے جھگڑتے جیسے ہی میں سکول پہنچا ھاتھ ٹھنڈے برف ہوچکے تھے ،چنانچہ ہاتھ کچھ گرم کرنے کی غرض سے سبھی مدرسین سے ھاتھ ملانا 👏شروع کر دیا،اور جس سے بھی ہاتھ مِلاتا اس کی بھر پور کوشیش ہوتی کہ مجھ سے فوری ھاتھ چھُڑا لے مگر مجھے تو اپنے گناہ جھَڑوانے ... Read More »

*آخری حَل*

تحریر، محمد جمیل اختر (آنکھیں نَم کرتی تحریر) دیکھو! تُمہارے بچّے کا علاج ہو جائے گا، لیکن تُمہیں جلد رقم کا اِنتظام کرنا ہو گا. ڈاکٹر نے اُس کے بچّے کا معائنہ کرتے ہوئے کہا. صاحب! کوئی رعایت؟ دیکھو یہ کوئی پَھل سبزی کی دُکان تو ہے نہیں کہ تم سے رعایت کی جائے، علاج کی جو رقم بن رہی ... Read More »

کنویں کی موت۔۔۔

 تحریر وقار احمد ملک گمشدہ خوابوں سے میری محبت لافانی ہے۔ یہ خواب مالی منفعت سے ماوراکسی اور ہی دنیا کے واقعات محسوس ہوتے ہیں۔ جب زمانہٗ موجود کی ہلچل اور مشینی مصروفیات مجھے ستاتی ہیں تو میں ماضی کی حسین یادوں میں کھو کر اپنی درماندہ روح کو اس کی مرغوب غذا مہیا کر دیتا ہوں۔ آج یادوں کی ... Read More »

کیشوری

 وقار احمد ملک کیشوری کا گھر صدر بازار کے بائیں پہلو میں ایک بڑی گلی میں تھا۔ گھر پرانی طرز کا اور ہندوؤں کے روائیتی رہن سہن کا عکاس تھا۔ گھر میں ہر وقت ایک سیلن زدہ ماحول چھایا رہتا۔ صحن میں لگی اونچی نیچی اینٹیں ہر وقت نمدار رہتیں۔ وجہ شاید یہ تھی کہ اس گھر میں دھوپ برائے ... Read More »

کتبہ

مختصر افسانہ *+* کتبہ *+* عجیب شہر تھا اور شہر کے لوگ بھی عجیب سے تھے, سو میں جلدی جلدی شہری آبادی سے باہر نکل کر ایک طرف چل دیا, ابھی کچھ ہی فاصلا طے کیا تھا کہ راستے کے ایک جانب نیم کے گھنے درخت کے سائے میں ایک قبر دیکھی جس کے سرہانے ایک خوبصورت دوشیزہ سفید لباس ... Read More »

محبت

آیوشہ راٹھور ٓآج پانچ سال بعد پھر میں اپنی دھرتی ماں کے قدموں میں کھڑا ہوں ۔ ’’وہ دھرتی ماں جس نے مجھے بہت چاہنے والے ، پیار کرنے والے اپنے دیے۔۔۔‘‘ بہت سے ان گنِت لمحے اور خوبصورت یادیں تھیں جو آج بھی کسی ناگن کی طرح پھن پھیلائے میرے سامنے کھڑی ہیں۔ کہتے ہیں،،، ’’ہمیشہ ندی کے دوسرے ... Read More »

جنگل میں گاؤں۔۔۔ افسانہ

وقار احمد ملک کراچی اور ملتان جاتی ہوئی ایم ایم عالم نامی شاہراہ سے ایک لنک روڈ کندیاں نامی ایک تاریخی شہر کی طرف جاتا ہے۔ مغرب کی سمت جاتے ہوئے اس لنک روڈ پر دو تین کلو میٹر کے فاصلے پر دریائے سندھ سے نکالی گئی ایک بہت گہری اور تیز رفتار نہر “تھل کینال”نامی جنوب کی طرف رواں ... Read More »

افسانہ ۔۔۔ غیب سے امداد

غیب سے امداد محمدزبیرمظہرپنوار میلے کچیلے کالے سے گنگھریالے بالوں والے (رکھو )نے اپنی منجھلی بہن کو بازو سے پکڑ کے جھنجھوڑتے ھوۓ کہا اٹھ صبح ھو گئی ھے.. کچھ ٹکر پانی کا انتظام کر نزیراں۔۔۔۔ کہہ کر وہ بڑبڑانے بیٹھ گیا۔۔۔ نہ جانے دنیا میں ہم کیا کرنے آۓ ھیں.. نہ گھر ھے نہ گھاٹ ہے۔۔ در در ہے ... Read More »

خوشخبری

بی بی جی! میں آ جاؤں؟ ” پروین نے ٹوکری سے کوڑا اپنی کچرا گاڑی میں منتقل کرتے ہوئے بی بی جان سے پوچھا “ہاں ہاں، کیوں نہیں! تم سامنے نل سے ہاتھ دھو کر آؤ، تب تک میں ناشتہ منگواتی ہوں” بی بی جان نے شفقت بھرے انداز میں پروین کو جواب دیا اور ساتھ ہی اپنی بہوؤں کو ... Read More »

گیلا کاغذ۔

وقار احمد ملک وہ میری ملازمت کا پہلا دن تھا۔ خاتون ہونے کے ناطے میں تدریس کو ایک محفوظ پیشہ سمجھتی تھی۔ میری شروع سے سرکاری ملازمت کی خواہش تھی اور وہ بھی کسی دیہاتی علاقے میں۔ شہر سے دور گاؤں کی پرسکون فضاؤں میں دن گزارنا میرا ایک خواب تھا۔ نہ شہر کا شور، نہ گاڑیوں اور فیکٹریوں کا ... Read More »