شاعری

دن کوئی گزارا جائے

بوجھ کچھ دل سے محبت کا اتارہ جائےکوچہ یار میں دن کوئی گزارا جائے اس محبت میں تو دل ٹوٹنا ہے عام سی باتبچ کے رہنا کہ نہ دل ٹوٹ تمہارا جائے دیکھنا کیسے مری جان میں جاں آتی ہےاس کے ہونٹوں سے مرا نام پکارا جائے یہ تو ممکن نہیں درویش محبت نہ کرےمجھ سے درویش کو چوراہے پہ ... Read More »

تحفہ ء عید

تاز ڈاکٹر مقصود جعفریاہلِ جنوں بھی صاحبِ ادراک ہو گئےچالاک تو نہیں تھے پہ چالاک ہو گٸےدریا سے ہم کو اذنِ روانی ملا تو ہمسیلِ رواں پہ موجہء بے باک ہو گئےتب جا کے ہم کو رنگِ گُلِ سرمدی ملاجب شاخِ گُل پہ غنچہ ء صد چاک ہو گئےمیری فغاں سے شہرِ خموشاں میں غلغلہنالے بھی میرے گنبدِ افلاک ہو ... Read More »

رشکِ چمن

تازہ غزل ڈاکٹر مقصود جعفری کیا رشکِ چمن آج وہ گزرا ہے ادھر سےپھولوں کی مہک آتی ہے ہر راہگزر سے آتی ہے شبِ وصل شبِ ہجر کے پیچھےچھٹتے ہیں اندھیرے بھی رُخ نورِ سحر سے کشکول سے ہوتی نہیں اقوام کی عزتتعظیم ہے قوموں کی فقط کاسہءسر سے تُم راکھ میں کیوں ڈھونڈتے پھرتے ہو تپش کویہ گرمی ء ... Read More »

نعت رسول مقبول ﷺ

طاہر خان خلش۔۔۔ میں ٹوٹا ستارہ ، میں بے بس تمھارا مجھے آکے جوڑو ، تمھیں ہو سہارا لگن مجھ میں تیری، تصور بھی تیرا مجھے آکے دیکھو، سکون دو خدارا مسافر ہوں تیرا ،سفر بھی ہے تو ہی تو منزل ہے میری ، تو ہی ہے کنارا تو راسخ ہے دل پہ ،تو ہی جسم وجاں ہے تری ذات، ... Read More »

گزرا ہوں جن سے سارے وہ عذاب لکھوں

دل چاہتا ہے گناہ لکھوں اور ثواب لکھوں گزرا ہوں جن سے سارے وہ عذاب لکھوں جاگتی آنکھوں سے دیکھے تھے جو خواب ان کی تعبیر لکھو یا پھر وہ خواب لکھوں جسکی دید سے بے چین دل کو قرار آجاۓ کیو نہ اس چہرے کو میں مہتاب لکھوں جس پہ مر مٹنے کے لئے پروانے بے شمار ہوں ایسےحسن ... Read More »

بدل رہے ہیں

سلسلے متواتر بدل رہے ہیں رفاقت کے اب تو آثار نظر آتے ہیں رقابت کے پہلے پہل تو وہ ہر روز ملا کرتے تھے نہ جانے کیا ہوا اب *دَور* گئے خط و کتابت کے دل کیسے نہ ہو پریشان اس کے روٹھنے پہ کے وہ جناب بہت ضدی ہیں عادت کے ہم ملنے چلے بھی جاتے ان کے کوچے ... Read More »

پرسکون رہتا ہے

میری بگڑی صورت بگڑے حال پہ پرسکون رہتا ہے مجھے کوئی دیکھے نہ وہ اکثر مجھے کہتا ہے مجھے درد میں دیکھ نہیں سکتا وہ مہرباں میری آہ پہ اشک اس کی آنکھ سے بہتا ہے میرے لیے جینے کی خواہش رکھنے والا وہ میرے خواہش کے مطابق خود کو بدلتا ہے جب مخاطب ہوتی ہوں میں کسی اور سے ... Read More »

ڈرتی ہوں

رونے کی خواہش ہونے پر بھی ہنستی ہوں تیرے اداس ہونے سے دیکھو کتنا ڈرتی ہوں تم تو جھٹک کر بدل لیے ہو راستے مگر مجھے دیکھو میں تو اسی راہ پہ چلتی ہوں تم تو وہی کرتے ہو جو خواہشِ قلب ہو مگر میں جیسے تم چاہو اسی سانچے میں ڈھلتی ہوں تم اک بار ہی فقط الفت کی ... Read More »

ﺟﺎﺋﯿﮟ

ﺁﭖ ﺩﻝ ﺟﻮﺋﯽ ﮐﯽ ﺯﺣﻤﺖ ﻧﮧ ﺍﭨﮭﺎﺋﯿﮟ ، ﺟﺎﺋﯿﮟ رﻭ ﮐﮯ ﺑﯿﭩﮭﺎ ﮨﻮﮞ ﻧﮧ ﺍﺏ ﺍﻭﺭ ﺭُﻻﺋﯿﮟ ، ﺟﺎﺋﯿﮟ ﻣﺠﮫ ﺳﮯ ﮐﯿﺎ ﻣﻠﻨﺎ ﮐﮧ ﻣﯿﮟ ﺧﻮﺩ ﺳﮯ ﺟﺪﺍ ﺑﯿﭩﮭﺎ ﮨﻮﮞ ﺁﭖ ﺁ ﺟﺎﺋﯿﮟ ﻣﺠﮭﮯ ﻣﺠﮫ ﺳﮯ ﻣﻼﺋﯿﮟ ، ﺟﺎﺋﯿﮟ ﺣﺠﺮﮦ ﺀ ﭼﺸﻢ ﺗﻮ ﺍﻭﺭﻭﮞ ﮐﮯ ﻟﯿﮱ ﺑﻨﺪ ﮐﯿﺎ آﭖ ﺗﻮ ﻣﺎﻟﮏ ﻭ ﻣﺨﺘﺎﺭ ﮨﯿﮟ ﺁﺋﯿﮟ ﺟﺎﺋﯿﮟ اﺗﻨﺎ ﺳﺎﻧﺴﻮﮞ ﺳﮯ ﺧﻔﺎ ... Read More »

اندیشہِ جاں

کبھی تجھ کو ۔۔۔۔۔۔ یہاں اندیشہِ جاں تھا پہلے؟ یہ مرا دل تو ۔۔۔۔۔۔۔۔ تری جائے اماں تھا پہلے ایسا لگتا ہے چڑھا اس پہ ترے عشق کا رنگ دل کو جس رنگ میں دیکھا ہے، کہاں تھا پہلے عشقِ سوزاں کی ہوئی خاص عنائت مجھ پر ہے جہاں راکھ ، مرا حُجرہ وہاں تھا پہلے کائیناتیں جہاں اب وجد ... Read More »