سوچ کے دریچے

چور کی ڈاڑھی میں تنکا

ہم بے سکون کیوں رہتے ہیں.”” ہم میں سے ہر شخص چور ہے اور اپنے لیول کی چوری کرتا ہے پھر جواز بھی بناتا ہے .ڈاکٹر محمد اعظم رضا تبسم کی اس سوال کے جواب پر مبنی تحریر. ایک مرتبہ اکبر ادشاہ کی انگوٹھی کھو گئ-اکبر بڑا پریشان ہوا کیونکہ یہ اس کے باپ کا تحفہ اور نشانی تھی۔ جب ... Read More »

ضروری اعلان …ہمارا بو علی سینا گم گیا …

کتاب سے محبت اور اس محبت کی افادیت پر ڈاکٹر محمد اعظم رضا تبسم کی ایک اچھوتی تحریر …. بخارا کا ایک بادشاہ کسی مرض میں مبتلا ہو گیا۔ شاہی طبیب نے بہت علاج کیا لیکن مرض کی شدت میں کمی نہ آئی۔چنانچہ شاہی طبیب نے اعلان کرادیا کہ جو شخص بادشاہ کا علاج کرے گا اسے منہ مانگا انعام ... Read More »

چار ٹھگ اور ایک دیہاتی …

دور حاضر کے عجیب فتنوں سے بچنے کا منفرد راز ڈاکٹر محمد اعظم رضا تبسم کے قلم سے . پرانے وقتوں میں لوگوں کو بیوقوف بنا کر مال بٹورنے کے لیے ایک گروہ ہوا کرتا تھا اس گروہ سے وابستہ لوگ ٹھگ کہلاتے تھے، انہی ٹھگوں کا ایک واقعہ ہے کہ ….! “ایک دیہاتی بکرا خرید کر اپنے گھر جا ... Read More »

درخت جانتا ھے

➖ *گہری بات* ➖ درخت جانتا ھے کہ اُسے آخِر، نہ صِرف بے دردی سے کاٹا جائے گا بلکہ! بطور اِیندھن جلایا بھی جائے گا۔ لیکن! پھر بھی وہ، اِنسان، چَرند و پرند کو فائدہ ھی دیتا ھے، کبھی سائہ، کبھی تپتی دھوپ میں ماں جایا، کبھی خوراک، کبھی ضرورتِ املاک، کبھی پَھل، کبھی پُھول، کبھی گھر کی تعمیر میں، ... Read More »

دوسرا حسین کیوں نہیں ؟ 

خدا اداکاری سے اور ریاکاری سے نہیں اللہ والوں اور اہل علم کی یاری سے ملتا ہے””اسلامی معاشرہ کا تحفظ”” کے موضوع پر ڈاکٹر محمد اعظم رضا تبسم کی اچھوتی تحریر…… .ایک دفعہ ایک مفکر سے کسی نے سوال کیا کہ زمانے میں دوسرا حسین کیوں نہیں آیا تو اس مفکر نے جواب دیا “”کیونکہ دوسری فاطمہ نہیں آءی”” (ڈاکٹر ... Read More »

بادشاہ کالنگر اور فقیر

رزق بڑھانے کاآسان نسخہ ,ڈاکٹر محمد اعظم رضا تبسم کی در دل پہ دستک ایک تحریر….. نیک دل بادشاہ کا لنگر کھلا رہتا اور مخلوق خدا صبح شام آتی اور کھانا تناول کرتی، نئے وزیر خزانہ نے بادشاہ کو مشورہ دیا، سرکار یہ لنگر حکومتی خزانے پر بوجھ ہے اس کو ختم کر دیں، بادشاہ نے وزیر کے کہنے پر ... Read More »

صفائی کا مُنہ بولتا ثبوت ھے۔*

ھماری صفائی کا یہ عالم ھے کہ اپنا گھر تَو صاف سُتھرا کر لیتے ھیں، لیکن گھر سے نِکالا ھُوا کُوڑا عموماً باہِر گلی میں پھینک دیتے ھیں۔ *جو ھماری صفائی کا مُنہ بولتا ثبوت ھے۔* *اِقبال اَحمد پَسوال* Read More »

جُھکتا

مُحَبّت و عِزت کرنے کے لئے، جو مَیں جُھکتا ھُوں،* *مَت سمجھو کہ، مُحَبّت و عِزت جُھک کر لیتا ھُوں*. *اِقبال اَحمد پَسوال* Read More »

ھوائیں

*ھَواؤں میں اُڑنے کے شوق میں، یہ مَت بُھولئیے،* *ھوائیں بُلندی پہ لے جا کر، پٹخ دیتی ھیں*. *اِقبال اَحمد پَسوال* Read More »

*گُناہ*

*گُناہ* کے تارِیک راستوں سے نِکلنے کے لئے، *توبہ* کا چراغ جلانا ضروری ھے، *قولِ اِقبَال اَحمَد پَسوال* Read More »