*پیارے پاکِستانی بَچُّوں کے نام*

اے میری قَوم کے ھونہار بَچّو،
گُلشن میں ھے تُمہی سے، بہار بچّو۔

اقراء سے ھُوئی ھے، اِبتِدا تُمہاری،
بُھولے اگر تَو، ھو جاؤ گے بے مہار بَچّو۔

“مایُوسی کُفر ھے” ذہن نشین رکھنا،
سَوچ میں اپنی رکھنا، نِکھار بَچّو۔

ھَم سب ھیں اُمید باندھے ھُوئے،
قَوم کے تُمہی ھو، مُعمار بَچّو۔

دِلُوں کو جو، فتح کرنا ھے تَو،
قَلَم کو بنائے رکھنا، ہَتھیار بَچّو۔

پُھولُوں کو جَو چُننا ھے تُمہیں،
راہ سے اپنی ھٹاتے جاؤ، خار بَچّو۔

پیغامِ اِقْبَالْ، کرتا ھُوں نام تُمہارے،
مِٹا دو اپنی زِندگی سے، لفظِ ہَار بَچّو۔

*اِقبال اَحمد پَسوال*



Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*