نیو اسلام آباد ایئرپورٹ کا افتتاح ۔ایک اور سنگ میل!!!

(محسن علی ساجد)
گزشتہ روز تقریباً 13 سال کے عرصے میں مکمل ہونے والے نیو اسلام آباد انٹرنیشنل ایئر پورٹ کا افتتاح کر

Mohsin Ali Sajid

دیاگیا۔ جدید ترین سہولیات سے آراستہ ملک کے سب سے بڑے انٹرنیشنل ایئرپورٹ کا افتتاح وزیر اعظم اسلامی جمہوریہ پاکستان شاہد خاقان عباسی نے کیا۔ تقریب کے موقع پر وفاقی وزراء سمیت پی آئی اے کے افسران اور دیگر متعلقہ حکام بھی موجود تھے۔ اس موقع پر کراچی سے آنے والی پی آئی اے کی پرواز پی کے 300 نے نیو اسلام آباد ایئرپورٹ پر پہلی لینڈ کی، اس موقع پر وزیراعظم اور ایئرلائن حکام نے مسافروں کا استقبال کیا۔نیو اسلام آباد انٹرنیشنل ایئر پورٹ 19 مربع کلو میٹر پر محیط ہے جہاں سے پروازوں کا باقاعدہ آغاز ہوگیا ہے۔جدید ترین سہولیات سے آراستہ، دو رن وے والے نیو اسلام آباد انٹرنیشنل ایئرپورٹ کی عمارت کو جہاز کے پروں کی طرز پر بنایا گیا ہے جہاں بیک وقت 28 ہوائی جہازوں کے مسافروں کو سہولیات مہیا کی جا سکتی ہیں۔اسلام آباد کا نیا ایئرپورٹ خطے کے ایوی ایشن حب کے طور پر ڈیزائن کیا گیا ہے جہاں مسافروں کی سہولت کیلئے 3 شاپنگ مالز، گالف کورس، سینما گھر، بڑا ہسپتال، کنونشن سینٹر، ڈیوٹی فری شاپس اور ریسٹورنٹ بھی موجود ہیں۔ایئرپورٹ پر بین الاقوامی معیار کے مطابق سیلف چیک ان کاؤنٹرز، لانگ ٹائم پارکنگ، 8 فائر کریش ٹینڈرز، جدید ترین ایئرفیلڈ، طیاروں کو فنی سہولیات فراہم کرنے کیلئے جدید ترین ایم آر او سسٹم اور الگ کارگو ٹرمینل بھی بنایا گیا ہے۔اس موقع پر مشیر ہوابازی سردار مہتاب عباسی کا کہنا تھا آج بہت خوشی کا دن ہے کہ ایک خواب کو حقیقت ملی ، الحمدا ﷲ حکومت ایک سنگ میل عبور کرنے میں کامیاب ہوئی ۔2013ء میںجب مسلم لیگ (ن) کی حکومت آئی تو زیر التواء کئی پاور سیکٹر ایئر پورٹس سمیت دیگر شعبوں کے منصوبوں کی تکمیل کا عزم کیا اور آج یہ منصوبہ مکمل ہوا جو جدید ترین ہے۔مشیر ہوابازی کا کہنا تھا کہ یقین ہے یہاں سے دنیا بھر کے ممالک تک رسائی ہوگی اور ہمارا کاروبار اور



معیشت ترقی کریگی ،یہ منصوبے کاصرف افتتاح ہی نہیں بلکہ ہم جدید ترین سہولتوں کی فراہمی پر یقین رکھتے ہیں، جب منصوبہ شروع کیا گیا تو ٹیکنالوجی میں کئی تبدیلیاں رونما ہوئیں، سی اے اے نے اس میں جدید ترین سہولتوں کو یقینی بنایا ہے تاہم ہمیں اس حوالے سے عالمی ماہرین کی مشاورت سے مزید بہتری کیلئے کام کرنا ہوگا جو دوسرے مرحلے میں ہوگا۔ سی اے ای سیکٹر قومی معاشی ترقی میں اہم کردار ادا کا حامل ہے۔مشیر ہوابازی نے ایک اور نوید سناتے ہوئے کہا کہ جنوری میں فیصل آباد ایئر پورٹ کا افتتاح ہوا اور آنیوالے دنوں میں پشاور اور کوئٹہ کے اپ گریڈ ایئر پورٹس کا بھی افتتاح ہوگا۔ 500 ملین ڈالر سے لاہور کی اپ گریڈیشن بھی کی جا رہی ہے اور چند دنوں میں اس منصوبہ کا افتتاح بھی ہوگا۔ سی اے اے بدلتی ہوئی دنیا کی ضروریات کو پورا کرنے کیلئے کام کر رہی ہے تاکہ مقامی اور عالمی مسافروں کو سہولیات فراہم کی جا سکیں۔ افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم اسلامی جمہور یہ پاکستان شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ سی اے اے اور فضائی سفر آج کے دور کی ضرورت ہے اور کسی بھی ملک کی ایوی ایشن نہ صرف اپنے ملک کی ثقافت کی عکاس ہوتی ہے بلکہ یہ اقتصادی ترقی کا گیٹ وے بھی ہے جس سے ملک میں معاشی ترقی کی عکاسی ہوگی۔ انہوں نے کہاکہ نئے ایئر پورٹ کی تکمیل سے گذشتہ پانچ سال کے دوران حکومت کی کارکردگی کا اظہار ہوتا ہے یہ منصوبہ سی پیک کے روڈ کے نزدیک ترین ہے جس سے اس کی افادیت مزید بڑھ جاتی ہے۔وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ(ن) کی حکومت نے نہ صرف سالوں سے زیر التواء منصوبوں کو مکمل کیا بلکہ کئی نئے منصوبے شروع کر کے ان کی بروقت تکمیل کو بھی یقینی بنایا۔ وزیر اعظم نے کہا کہ گوادر ایئر پورٹ پر بھی جلدکام شروع کر دیا جائیگا،سیالکوٹ کا ایئر پورٹ اگر عالمی سطح پر نہیں تو ریجن نجی شعبہ کے زیر انتظام چلایا جانے والا کامیاب ترین منصوبہ ہے جس کو وسیع کیا گیا۔وزیر اعظم نے کہا کہ یہ ہماری حکومت کی کامیابیاں ہیں کہ اس نے نہ صرف سول ایوی ایشن بلکہ معیشت کے دیگر شعبوں میں کئی بڑے منصوبے مکمل کئے جن میں 1700 کلو میٹر طویل موٹرویز کی تعمیر پر بھی کام جاری ہے اس کے علاوہ پشاور تا کراچی ہائی وے کو مکمل کرنے کے علاوہ ملک کے تمام صوبوں میں ہزاروں کلو میٹر طویل شاہراہوں کی تعمیر کی گئی ہے۔اپوزیشن جماعتیں تنقید ضرور کریں مگر حکومت کے احسن اقدامات کی حوصلہ افزائی بھی کریں ،کیونکہ جمہوریت میں تنقید برائے تعمیر ہے نہ کہ تنقید برائے تنقید۔ اس میں کوئی شک نہیں کہ جہاں دیگر شعبوں میں وفاقی حکومت نے قابل تحسین اقدامات کیے وہاں ائیر پورٹس کی تعمیر نو پر بھی توجہ دی گئی اور خاص کر گوادر اور نیو اسلام آباد ائیر پورٹ جو کہ گزشتہ 13سالوں سے جاری منصوبہ تھا اس کی تکمیل یقینی بنائی ۔نیو ائیر پورٹ منصوبہ کی تکمیل میں2013ء سے قبل کئی مسائل تھے،لیکن حکومت کے احسن اقدامات کی وجہ سے آج نیو اسلام آباد ائیر پورٹ قوم کیلئے ایک عظیم تحفہ ہے ،منصوبے کی تکمیل میںمشیر ہوابازی سردار مہتاب عباسی سمیت دیگرحکام کی کاوشیں بھی قابل تحسین ہیں۔اُمید ہے حکومت دیگرکئی منصوبوں کی تکمیل بھی اپنی مقررہ مدت تک یقینی بنائیگی۔اور عوام ان منصوبوں سے مستفید ہوتے رہیں گے۔




Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*